Skip to content
Baang e Dara
بانگِ درا 79: انسان از علامہ اقبال مع تشریح

بانگِ درا 79: انسان

بانگِ درا کی اِس نظم میں علامہ اقبال نے دیگر مظاہرِ فطرت کے ساتھ انسان کا تقابل کیا ہے اور اُن کے اور انسان کے مابین فرق کو واضح کیا ہے۔
Baang e Dara 98 Husn o Ishq

بانگِ درا 69: حُسن و عشق

یہ نظم بظاہر رومانی جذبے کی حامل معلوم ہوتی ہے لیکن علامہ نے اس میں درحقیقت تصوّف کے اس نظریہ کی تبلیغ کی ہے کہ محبت ہی تخلیقِ عالم کی بنیادی عِلّت اور...
Baang e Dara 126 Dua

بانگِ درا 126: دُعا

نظم ”دعا“ علامہ نے اُس دور میں کہی تھی جب ایران اور ترکی مصیبتوں کا شکار تھے اور دنیا کے دوسرے مُلک نصاری سے سازباز کر رہے تھے۔
Baang e Dara 152 Mazhab

بانگِ درا 152: مذہب

اس نظم میں اقبالؔ نے واضح کیا ہے کہ دنیا والوں کی قومیّت ”وطن“ سے بنتی ہے، مگر مسلمانوں کی قومیّت رشتۂ اسلام سے بنتی ہے۔
Baang e Dara 32 Rukhsat Ae Bazm e Jahan

بانگِ درا 32: رُخصت اے بزمِ جہاں!

گو یہ نظم طبع زاد نہیں اس کے باوجود علامہ اقبال کے اس دور کے بعض بنیادی افکار کی ترجمانی کرتی ہے مثلاً اس میں علامہ کی نظم ”ایک آرزو“ کی روح کارفرما نظر...
Baang e Dara 41 Subah Ka Sitara

بانگِ درا 41: صبح کا ستارہ

یہ نظم اقبالؔ کی قوّتِ تخیّل کا کرشمہ ہے۔ مقصد اس نظم سے یہ ہے کہ اگر کسی کو حیاتِ ابدی کی آرزو ہو تو اپنے اندر عشق کا سوز پیدا کرے۔
Baang e Dara 159 Daryuza'ay Khilafat

بانگِ درا 159: دریوزۂ خلافت

یہ نظم اُس موقع پر لکھی گئی جب مولانا محمد علی مرحوم ایک وفد لے کر خلافت کا مسئلہ انگلستان کے وزیرِ اعظم لائڈ جارج کے سامنے پیش کرنے کے لیے گئے تھے۔
Baang e Dara 129 Shabnam aur Sitare

بانگِ درا 129: شبنم اور ستارے

اِس نظم میں تاروں کے حوالے سے اس دنیا کے ”دِلکش“ حالات پوچھے گئے ہیں، جس پر شبنم نے اُن کی اُمید کے خلاف اس دنیا کا وہ حال سنایا ہے جو مایوسیوں اور محرومیوں...
Baang e Dara 169 Kabhi Ae Haqiqat e Muntazar

بانگِ درا 169: کبھی اے حقیقتِ مُنتظر!

اِس غزل میں ربِ ذوالجلال سے خطاب کیا گیا ہے اور اُس کے دیدار کی خواہش ظاہر کی گئی ہے۔
Baang e Dara 37 Bilal

بانگِ درا 37: بلالؓ

اِس نظم میں اقبالؔ نے سیّدنا حضرت بلالؓ کی شخصیت کے اس پہلو کو نمایاں کیا ہے جس کی بدولت ان کی زندگی میں فاروقِ اعظمؓ کی زبانِ مبارک سے ”سیّدنا“ کا لقب...
بانگِ درا 35: نالۂ فراق از علامہ اقبال مع تشریح

بانگِ درا 35: نالۂ فراق

بانگِ درا کی نظم نالۂ فراق میں علامہ اقبال نے اپنے فلسفہ کے استاد ڈاکٹر آرنلڈ کی یاد میں اپنے احساسات نظم کیے ہیں۔
Baang e Dara 103 Aik Haji Madine Ke Raste Mein

بانگِ درا 103: ایک حاجی مدینے کے راستے میں

یہ نظم ایک حاجی کی زبان سے کہی گئی ہے جو قافلے کے ساتھ مکہ سے مدینہ جا رہا تھا۔ راستے میں ڈاکہ پڑا، کچھ لوگ مارے گئے، باقی مدینے کا قصد چھوڑ کر مکہ کی...
1 2 3 4